ادارہ بتول

پون صدی کی درخشندہ روایت

ادارہ بتول

پون صدی کی درخشندہ روایت

خواتین اور سیلف ڈیفنس -بتول جنوری ۲۰۲۱

جسمانی طور پہ چا ق و چوبند رہیے تاکہ اپنا دفاع کرسکیں

چند ماہ پیشتر سانحہ موٹر وے نے ایک مرتبہ پھر ساری قوم کو ہلا کر رکھ دیا۔ بدقسمتی سے ہر بار آنے والی حکومتوں نے عام شہری کے تحفظ اور سیلف ڈیفنس کی تربیت کو اہم نہیں سمجھا۔ہم سب کو اپنی مدد آپ کے تحت سیلف ڈیفنس کے متعلق کچھ نہ کچھ بنیادی معلومات حاصل کر کے اپنی اور بچوں کی تربیت کا لازمی حصہ بنانا ہو گا۔کچھ طریقے ایسے ہیں جن کا علم خاص طور پر خواتین اور بچوں کے پاس ہونا چاہیےتاکہ وہ کسی بھی ہنگامی صورت ِ حال کا مقابلہ کر سکیں۔
عورتیں ہوں یا مرد، صبح شام معوذتین، گھر سے نکلتے وقت حفاظت کی دعا اور سفری دعاؤں کا خاص طور پر اہتمام کرنا چاہیے اور بچوں کو بھی ان کا عادی بنانا چاہیے۔ عورت کے لیے اگرچہ اللہ تعالیٰ نے پردے کو بطور خاص اس کی ڈھال بنایا ہے تاکہ وہ بدنیت اور بد نظر افراد کے شر سے بچی رہے اور وہ اس کے کردار کے متعلق کسی غلط فہمی میں نہ رہیں۔لہٰذا نکلنے سے پہلے خود کو ڈھانپنے کا اہتمام اللہ کا حکم سمجھ کر کیا جائے اس یقین کے ساتھ کہ اللہ تعالیٰ نے عورت کے لیے اس میں بے شمار فائدے رکھے ہیں۔مگر چونکہ معاشرے کے بگاڑ میں اضافہ ہو تا جارہا ہے اور ہمارےپولیس کے غیر مؤثرنظام کے باعث لاقانونیت بڑھ گئی ہے، جبکہ دوسری طرف آجکل خواتین کو بہت سی مجبوریوں کے تحت گھر سے باہر مختلف اوقات میں اکثر ہی نکلنا پڑتا ہے اور خدشات لاحق رہتے ہیں۔اس صورتحال میں ضروری محسوس ہوتا ہے کہ اپنی حفاظت کے لیے مزید اہتمام کیا جائے۔
سیلف ڈیفنس کے کچھ بنیادی اقدام (MOVES)ہماری عام گھریلو خواتین کولازمی طور پر پتہ ہونے چاہئیں۔ انہیں انٹر نیٹ سے سرچ کر کے اپنی سہولت سے ورزش کے اوقات میں روزانہ کی بنیادوں پر اس کی پریکٹس کریں اور اسے زندگی کا حصہ بنائیں۔روزانہ واک کرنے کی روٹین ضرور بنائیں اپنے جسم کو چاق و چوبند رکھیں تاکہ کسی بھی ہنگامی صورت میں آپ کو دوڑنے میں آسانی ہو۔گھر میں باکسنگ کا اہتمام کریں۔ مناسب قیمت میں کسی بھی اسپورٹس شاپ سےBoxing Gloves خرید لیں اور روازنہ گھر کی کسی بھی دیوار پر 200 سے 300 دفعہ پوری قوت کے ساتھ باکسنگ کریں۔یہ ایک ایسی ورزش ہے جو آپ کو چاق و چوبند رکھے گی آپ کو بہادر بنائے گی آپ کے پٹھوں کو مضبوط کرے گی اورکسی بھی ہنگامی صورتِ حال سے نبٹنے کے لیے آپ کو ذہنی طور پر ہمیشہ تیار رکھے گی۔
دوسری اہم بات سیلف ڈیفنس کے گیجٹس کی ہے جوپوری دنیا میں مناسب قیمت اور آسانی سے دستیاب ہونے کی وجہ سے نہایت مقبول ہیں۔ یہ گیجٹس کسی بھی صورت میں اکیلے نکلتے ہوئے خواتین کے پاس موجود ہونے چاہیں۔
سیلف ڈیفنس رِنگ
یہ خاص طور پر خواتین کے لیے بنائی گئی ہے اس رنگ کے اوپری حصے میں ایک خنجر نما نوکیلی نوک ہوتی ہے جو ایک ہی وار میں سامنے والے کو زخمی کر دیتی ہے۔ خواتین گھر سے نکلتے ہوئے اسے آسانی سے انگوٹھی کی طرح پہن سکتی ہیں۔
پرسنل الارم کی چین
پرسنل الارم کی چینز بھی سیلف ڈیفنس کے لیے پوری دنیا میں آسانی سے کم قیمت میں دستیاب ہونے کی وجہ سے بے حد مقبول ہیں۔ان کی چینز کو خرید لیں اور گھر پہ ان کی اس وقت تک پریکٹس کریں جب تک آپ کو اپنی گرفت کی مضبوطی پر پورا یقین نہ ہو جائے۔ان کی چینزکو گھر،کار،ہینڈ بیگس اور ان تمام چابیوں اور اشیا میں ڈا ل یا لٹکا لیں جو آپ گھر سے باہر جاتے ہوئے ہمیشہ اپنے ساتھ رکھتی ہیں۔
بلنگ سٹنگ سپرے
bling sting pepper spray سیلف ڈیفنس کے لیے استعمال ہونے والے گیگ جیٹس میں سے ایک ہے ۔اس سپرے کی خاصیت یہ ہے کہ اس میں سے ایک تیز روشنی گولی کی طرح بالکل سیدھا نشانے پہ جا کر لگتی ہے۔اس کا فائدہ یہ ہے کہ آپ دور سے ہی حملہ آور کو اس روشنی کے ذریعے گرا سکتی ہیں۔ خواتین کے لیے یہ پاکٹ سائز سپرے پوری دنیا میں بے حد مقبول ہے۔
کومب نائف
comb knife جیسا کہ نام سے ظاہر ہے کنگھے کے نچلے حصے میں نہایت خوبصورتی سے چھوٹے سائز کی چھری لگائی گئی ہے جسے آسانی سے خواتین اپنے بیگ میں رکھ سکتی ہیں۔ یہ کنگھا فولڈایبل شکل میں بھی دستیاب ہے جسے آسانی سے گاڑی،ہینڈ بیگ،جرابوں یا جیکٹ کی جیب میں چھپا کر رکھا جا سکتا ہے۔
لپ اسٹک سٹن گن
lipstick stun gun بالکل لپ اسٹک جیسی دیکھتی ہے لیکن سائز میں لپ اسٹک سے تھوڑی بڑی ہوتی ہے۔اس میں ایک تیز روشنی والی ٹارچ لگی ہوتی ہے۔یہ کسی بھی ہنگامی صورت میں اردگرد کے لوگوں کو توجہ دلانے کے لیے یا پھر حملہ آور کی آنکھوں میں مار کر اسے گرانے میں آپ کی مدد کرتی ہے۔
ان گیجٹس کے علاوہ cell phone pistolیا Bola wrap گاڑی میں کسی ایسی جگہ چھپا کرمستقل طور پر رکھے جا سکتے ہیں جہاں کسی بھی ہنگامی صورت میں آسانی سے ہاتھ پہنچ جائے۔سیلف ڈیفنس کے لیے استعمال ہونے والے یہ تمام گیجٹ انتہائی مناسب قیمت پر آن لائن ویب سائٹس پر دستیاب ہیں۔
سیلف ڈیفنس کے لیے جو بھی کریں اپنے بچوں کو اپنے آس پاس رکھیں اور انہیں کسی بھی ہنگامی صورت ِ حال کا مقابلہ کرنے کے لیے تیار کریں۔بچوں کو بتائیں کہ ایک ہاتھ آگے اور ایک ہاتھ پیچھے اس دائرے میں کوئی بھی آپ کے قریب آنے کی کوشش کرے تو وہاں سے بھاگ جائیں یا شور مچائیں۔مرد حضرات کو چاہیے کہ سیلف ڈیفنس کے حوالے سے اپنے گھر کے تمام افراد سے بات کریں اس معاملے کو سنجیدگی سے لیں اور اپنے اہل ِ خانہ کے ساتھ اس حوالے سے پورا پورا تعاون کریں۔ یاد رکھیے انسان کی قسمت میں جو حا دثہ لکھا ہوتا ہے وہ ہو کر رہتا ہےمگر احتیاطی تدابیر اختیار کرنا ہمارے دین کی تعلیم ہے ۔ سوشل میڈیا پر سیلف ڈیفنس اور نفس کی تربیت کے حوالے سے اپنی مادری زبان میں روزانہ یا ہفتے میں ایک مرتبہ کوئی بھی معلوماتی پوسٹ ضرور لگائیں۔البتہ جرائم پر مبنی واقعات کی تشہیر کا مکمل طور پر بائیکاٹ کریں۔اسکول، کالج، مد ا ر س، مساجد، دفاتر ہر جگہ سیلف ڈیفنس کے متعلق بنیادی معلومات اور ورکشاپس کا اہتمام بھی ہونا چاہیے۔

٭ ٭ ٭

:شیئر کریں

Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on linkedin
0 0 vote
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
Would love your thoughts, please comment.x
()
x